زندگی کے پتے دانشمندی سےکھیلیں

مصنف: اعجاز عالم | موضوع: معاملات زندگی

زندگی تاش کے پتوں کی مانند ہے، ہر ہنر، ہر اہلیت اور ہر فن ان پتوں پر درج ہے۔ یہ ابھی آپ پر منحصر ہے کہ آپ اپنی زندگی کے پتے کیسے کھیلتے ہیں، اور آپ کا کھیلنے کا انداز ہی یہ ثابت کرے گا کہ آپ زندگی کے کھیل میں جیت جاتے یا نہیں، اس لیے اپنی زندگی کے پتے اچھی طرح سمجھداری سے کھیلیے۔

آپ کے اندر بے شمار اہلیت اور قابلیت چھپی ہوئی ہے جسکی مدد سے آپ وہ چیز، وہ مقام اور وہ حیثیت حاصل کر سکتے ہیں جو آپ زندگی سے حقیقت میں چاہتے ہیں۔

یہ صرف آپکی اہلیت اور قابلیت کا ملاپ ہی ہو گا جو آپکی زندگی کو پر رونق اور آزاد بنا دے گا۔ اصل میں زندگی آپ کو صرف وہی کچھ دیتی ہے دتنا آپ اس سے طلب کرتے ہیں۔ لیکن کبھی کیا آپ نے یہ سوچا کہ آپ اپنی اصلی قابلیت اور اہلیت کے بدلے میں زندگی سے کیا حاصل کر رہے ہیں؟ کیا آپ سمجھتے ہیں کہ حالات مایوس کن ہیں؟ کیا آپ سمجھتے ہیں کہ بڑے مقاصد کا حصول اور کامیابیاں صرف دوسرے لوگوں کے لیے ہیں؟

غلط، غلط، غلط

اس خام خیالی سے باہر نکل آئیے اور یہ یقین کر لیں کہ آپ بھی ہر اس کام میں کامیابی حاصل کر سکتے ہیں جو آپ دلی لگن اور محنت سے کریں، چاہے وہ کام مشکل ترین ہی کیوں نہ ہو۔ آپکو معلوم ہونا چاہیئے کہ آپ کے اندر بےشمار توانائیاں اور اہلیت موجود ہے جس کی مدد سے آپ اپنے خوابوں کی تکمیل کر سکتے ہیں۔

شاید آپ مایوس ہو چکے ہوں اور نمبر دو سیڑھی پر آکر ٹھہر گئے ہوں کہ آپ اب کچھ نہیں کر سکتے اس لیے خود کو زندگی کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا جائے۔ یاد رکھیں جب آپ اپنے خوابوں اور خواہشوں کو پسِ پشت ڈال دیتے ہیں تو آپ خود کو مایوسی، ذہنی کوفت، تکلیف اور پریشانی کے گہرے، اندھے کنوئیں میں دھکیل دیتے ہیں۔

یہ پریشانی اور مایوسی کی کیفیت آپکی روز مرہ زندگی کو بری طرح متاثر کرتی ہے، اور نہ صرف آپکے انسانی رشتوں پر بلکہ آپکی جاب، صحت، رویے اور زندگی کے بہت سے کاموں پر بری طرح اثر انداز ہوتی ہے۔

اسکا ایک ہی حل ہے کہ اس سوچ سے باہر آ جائیں اور اپنی زندگی کا کنٹرول خود حاصل کر لیں

ہم زندہ اور آزاد ہیں اس لیے اپنی زندگیوں کو بہتر اور معنی خیز بنانا ہمارا حق ہے۔ ہم صحیح معنوں میں زندہ تب ہوتے ہیں جب ہم زندگی کا کنٹرول سنبھال کر اسے اپنی امیدوں اور خواہشوں کے مطابق چلاتے ہیں۔اور جب ہمیں خبر ہو جائے کہ ہمارے اندر بے پناہ صلاحیت اور توانئی موجود ہے تو ہمارا فرض ہے کہ اس صلاحیت اور توانائی کو صحیح استعمال کرکے اپنی زندگیوں کو بہتر بنائیں۔

اس دنیا میں کچھ لوگ ایسے ہیں جن کو شندگی کی راہ میں رکاوٹوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور کچھ ایسے بھی ہیں جن کو ترقی کے بے پناہ مواقع آسانی سے میسر آ جاتے ہیں۔ چاہے رکاوٹیں ہوں یا مواقع، اصل مسلئہ ان کو حل کرنے کا یا فائدہ اٹھانے کا ہم خود ہیں۔,

آزادی اور خوشحالی اس وقت تک حاصل نہیں ہو سکتی جب تک ہمیں یہ خبر نہ ہو جائے کہ ہم اپنی زندگی کے رخ کو تبدیل کر کے اسے خود کنٹرول کر سکتے ہیں۔ ہم اس نقظہ نظر کو تبدیل کر سکتے ہیں جس سے ہم دنیا کو دیکھتے ہیں۔ انسان اپنے آپ کو کسی بھی قسم کے حالات کے مطابق ڈھال سکتا ہے بشرطیکہ وہ اپنی مرضی کے ہوں۔

زندگی کی اصل خوشی اور سکون اس وقت حاصل ہوتا ہے جب انسان کے پاس اس فیصلے کی قوت اور موقع ہو کہ وہ کتنا اہم اور آزاد ہے اور کتنی خوشی حاصل کر سکتا ہے۔ جبکہ ہمارے معاشرے میں بہت سے لوگ ایسے ہیں کہ جب وہ کام پر جاتے ہیں تو اپنے باس کی طرف دیکھتے ہیں اور اس کو فیصلے کی قوت (جو کہ انکی اپنی ہوتی ہے) دے دیتے ہیں کہ وہ انکی زندگی کا فیصلہ کرے کہ وہ کتنے اچھے اور اہم ہیں، وہ کتنے محفوظ ہیں اور انہیں کتنی آزادی سے اپنی زندگی گزارنے کا حق ہے۔ یہ وہ اختیار ہے جو لوگ دوسروں کے حوالے کر دیتے ہیں۔

یار رکھیں کہ زندگی صرف ایک مرتبہ ملتی ہے لہذا اس سے پورا فائدہ اٹھائیں، ماضی پیچھے رہ گیا ہے، جو نقصان ہونا تھا وہ ہو چکا، مستقبل کا علم صرف اللہ تعالیٰ کو ہے۔ لیکن ایک بات پر یقین رکھئیے کہ جتنی آپ میں اہلیت اور قابلیت ہے اگر آپ اس کے مطابق نتیجہ چاہتے ہیں تو آپ یقیناً وہ حاصل کر سکتے ہیں۔ یہ یقین آپ کی شخصیت میں نکھار پیدا کر دے گا، آپ ترقی کی شاہراہ پر گامزن ہو جائیں گے اور سب سے بڑھ کر یہ کہ آپ سدا خوش اور مطمئن رہیں گے۔

خیالات کے اس پھندے میں مت پھنس جائیے جس نے بہت سے لوگوں اپنا شکار بنا لیا ہے کہ آپ پھر کبھی یا تھوڑا ٹھہر کر اپنے خوابوں یا مقاصد کو حاصل کر لیں گے۔ تھوڑے عرصے بعد آپ وہ شخص بنیں گے جو آپکے خیالوں اور شعور میں ہے۔ایسا مت سوچیئے کہ آپکی موجودہ زندگی ایک ریہرسل ہے اور اصل زندگی بعد میں شروع ہو گی۔

یہ آپکی اپنی زندگی ہے، آپ فطری طور پر آزاد پیدا ہوئے ہیں، زندگی صرف ایک مرتبہ نصیب ہوتی ہے، اس لیے اس سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھائیے۔ زندگانی کے کھیل میں آج سے شامل ہو جائیے، تماشائی نہ بنیں، اپنی زندگی اپنے خیالوں، اپنی مرضی اور اپنی منشا کے مطابق اس طرح سے گزاریں جیسے آج آپکا آخری دن ہے۔

اپنے آپ پر بھروسہ کیجئے، اپنے فیصلے مکمل سوچ بچار کے بعد کیجئے اور پھر ان پر ڈت جایئے۔ آپ کے اندر اپنے خوابوں اور خیالوں کو مکمل کرنے کی بے پناہ اہلیت اور توانائیاں موجود ہیں۔ جو کچھ بھی آپکی خواہش ہے وہ آپ حاصل کر سکتے ہیں اور اپنی ان توانائیوں اور اہلیت کی مدد سے دوسرے لوگوں کی زندگیوں کو متاثر کر سکتے ہیں۔

اسی توانائی سے آپ اپنے لیے اور اپنے خاندان کے لیے خوشحالی لا سکتے ہیں۔ اس لیے اپنے آپ کو نئے شخص کے طور پر تیار کیجئے اور خود کو بہترین حالت میں دیکھئے، لہذا اپنی زندگی کے پتے اچھی طرح کھیلئے۔ ابھی